Episode 27 – Last

اللہ ہم سب کو اپنی ذات سے ڈرنے کی اور  نیکی کی توفیق عطا فرمائے اور ہمیں اپنی اولاد کی لیے ایک اچھا ماں باپ بنائے۔اور ہمیں وہ دن نہ دکھائے جو شہزاد کی ماں (عزیز)  اور اس کی اولاد  اور ان سے جڑے ہر رشتے دار نے دیکھے۔کیونکہ جب انسان گناہوں میں اتنا گر […]

Episode 26

جس کی ممتا کی لوگ آج بھی بری مثال بیان کرتے ہیں کہ کوئی ماں اپنی اولاد کو اس قدر رسوا کرنے کے لیے درد بھری  اور ظالم دنیا میں اکیلا کیسے چھوڑ سکتی ہے۔اس نے ایک پل کے لیے بھی نہیں سوچا کہ آخر اس کے بیٹے کے ساتھ کیا سلوک ہو گا یا […]

Episode 25

کچھ عرصہ رقیہ سکول میں پڑھاتی رہی لیکن گھر کے کاموں کی مصروفیت کی وجہ سے سکول چھوڑ ناپڑا۔  شہزاد نے پوری محنت اور ایمانداری سے کام کیا اور مہینوں کا کام دنوں میں سیکھا  اور کام سیکھنے کے لیے نہ  دِن دیکھا نہ رات ۔اس نے تقریباَ ایک دوسال وہاں کام کیا اور پھر […]

Episode 24

انہوں نے ملک اکرم کو بلوا کراس سے بات کی تو ملک اکرم نے عابدہ کے سسر کے بات کی کہ عبدالغفور کو اب احساس ہو گیا ہے وہ عابدہ کو واپس گھر بھیجنے پر آمادہ ہو گیا ہے اس لیے اگر آپ اجازت دیں تو میں اسے لے کر آ سکتا ہوں۔جس پر عابدہ […]

Episode 23

عبدالغفور سے یہ حقیقت ہضم نہ ہوئی اور وہ اپنی جگہ سے آگ بگولا ہو کراٹھا اور  عبدالرحمٰن منہ پہ  تھپڑ دے مارا۔اورزُور زُور سے گالیاں بکنے لگا۔لیکن عبدالرحمٰن نے اس پر ہاتھ نہیں اٹھایا اور بس جواب میں اتنا کہا کہ میں لڑائی کرنے تو نہیں آیا تھا میںتو آیا تھا کہ آپ باپ […]

Episode 22

اب یوں کچھ دن گزرے اور دونوں کا غصہ تھوڑا ٹھنڈا ہوا تو شہزاد نے اپنی قوم کے ایک با اثر شخصملک اکرم سے رابطہ کیا جو عبدالغفور کی دوسری بیوی کا ماموں تھا اور عبدالغفور بھی اس کی بات نہیں ٹال سکتا  تھا تو  اس سے درخواست کی کہ میرے باپ سے بات کر […]

Episode 21

یہ بات سنتے ہی اس کے باپ نے اٹھ کر اسے مارنا چاہا لیکن گھر والوں نے آگے بڑھ کر روک لیا۔اور اس کے بعد شہزاد وہاں سے اٹھ کر اپنے کمرے میں چلا گیا۔ اس کے بعد جب شہزاد نے اچھی طرح سمجھ لیا کہ اس کا باپ کیا چاہتا ہے اور وہ اس […]

Episode 20

سب کھل کر سامنے آئے جب شہزاد چار پیسے کمانے گھر سے نکلا ۔ تَب سب رشتے ایک طرف ہو گئے اور شہزاد دوسری طرف۔ جو منہ پر بیٹا بیٹا اور بھائی بھائی کہتے  اور پیٹھ پر چھرا گھونپتےتھے سَب کھل کر ننگے ہو کر میدان میں اتر آئے۔ان کا یہ گمان کہ ان کے […]

Episode 19

اس نے کہا کہ بیوی تم اگر میرے برے حالات میں میرا ساتھ دو گی تو میں بھی وعدہ کرتا ہوں کہ انشاءاللہ میں بھی پوری ذمہ داری اور دل لگی سے محنت کروں گا اور آپ کو خوش رکھوں گا اس کے لیے مجھے آپ سے کچھ نہیں چاہیے صرف سوکھی روٹی کھا کر […]

Episode 18

اگر آج میں کام پر نہیں نکلوں گا تو کل کو بیوی اور بچوں کو کیسے کما کر کھلاؤں گا بس اب شہزاد نے یہ فیصلہ کر لیا کہ اب اسےیہاں نہیں رہنا ہے اور کسی سے بھی توقع نہیں کرنی ۔شاید اپنی بیوی کو اس ذلیل گھر سے نکال کر کہیں چھوٹا سا سکھ […]

Next Page »